2014 نومبر 4

واہگہ بارڈر

شاہی باغ سے امرود توڑنے پر اور ایک بلی کے شاہی مور کہا جانے پر نواز شریف نے کئی سپاہیوں کو معطل و فارغ کردیا۔ لیکن آج سینکڑو خاندان سانحہ واہگہ بارڈر میں اجڑ گئے، گود ویران ہو گئیں، بچے یتیم ہو گئے، سہاگ اجڑ گئے۔ سو کے قریب اپاہج ہوگئے اپنے جسم کے بچے کچے حصے لے کر، جبکہ دعوہ یہ ہے کہ پیشگی اطلاع تھی حکومت پنجاب کو، اور دھماکہ انڈیا کے ساتھ تجارت میں استعمال ہونے والے ٹرکوں کی آڑ میں کیا گیا ، جس کے مناسب چیکنگ کا اس انڈین نواز گورنمنٹ کو کوئی طریقہ کار نہیں۔ تو اس غفلت و لاپرواہی پر کیا وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف معطل یا فارغ ہوں گے؟؟ یہ ایک سوال ہے ان نام نہاد جمہوریت کے چیمپینز اور حواریوں کے لئے۔ اگر جواب نہیں ہے۔ تو میں پوچھتا ہوں یہ کون سی جمہوریت و طرز حکمرانی ہے جس میں انسانی جانوں کی قیمت ایک شاہی مور اور شاپی امرود کے برابر بھی نہیں۔ آج وہ انسان نشانے بننے غم نہ کرو اگر ایسا ہی رہا تو یہ آگ ایک ایک دن ہمارے، تمہارے گھر کو بھی لپیٹ میں لے گی۔ یہ اللہ کا قانون ہے ظلم کا ساتھ دینے والا ظالم سے بڑا سزا وار ہے اس کے ہاں۔

مکمل تحریر >>